ڈیرہ اسماعیل خان میں شیعہ ٹارگٹ کلنگ کا ایک اور واقعہ، دن دیہاڑے بھرے بازار میں امام بارگاہ کا متولی قتلامریکہ نے بیت المقدس کے حوالے سے متنازع اقدام اُٹھا کر اپنے پائوں پر کلہاڑی ماری ہے، سینیٹر حافظ حمداللہامریکی صدر نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کر لیاڈونلڈ ٹرمپ کا امریکی سفارتخانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنیکا اعلانیمن کے سابق صدر علی عبداللہ صالح قتل / مکمل کہانی جلد ہی صرف اسلام ٹائمز پر ۔ ۔ ۔اسرائیل کا دمشق کے قریب ایرانی فوجی اڈے پر حملہ"محبین اہلبیت (ع) اور تکفیریت" بین الاقوامی کانفرنس کے شرکاء کی رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای سے ملاقاتہم نے اپنی حکمت اور دانائی سے تکفیریت کو گندگی کے ڈھیر پر پہنچا دیا، ہم آج 28 جماعتوں کی سربراہی کر رہے ہیں، علامہ ساجد نقویبریکنگ نیوز / سعودی ولی عہد پر قاتلانہ حملہ / مکمل خبر اسلام ٹائمز پر ملاحظہ کریںلاپتہ افراد کے حق میں آواز اُٹھانا جُرم بن گیا، ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل ناصر شیرازی کو اغواء کر لیا گیا
 
 
 

امام معصوم کے فضائل و کمالات

شیعت کے لبادہ میں برطانوی ایجنٹ یاسر الحبیب کے خطرناک کارنامے

شیر خدا کی شیر دل بیٹی حضرت زینبؑ

غلو اور غالیان ائمہ معصومین علیہم السلام کی نظر میں

معصومہ اہل بیتؑ

غلو، غالی اور مقصر

مقام مصطفٰی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

علم اخلاق اسلامی

اہداف بعثت پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

حضرت محمد رسول اللہﷺکی ذاتِ گرامی

یہ وعدہ خدا ہے، نام حسین (ع) تا ابد زندہ رہیگا

عقیدہ ختم نبوت

اسوہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور ہمارا معاشرہ

سامراء میں آئمہ اہلبیت کی مشکلات اور منجی بشریت

علوم و مراکز دینی کے احیاء میں امام رضا (ع) کا کردار

بعثت پیامبر (ص) کے اہداف و مقاصد

سفر گریہ

سفرِ عشق جاری ہے!

نجف سے کربلا۔۔۔ میں نے اسے کہا

زیارت امام حسین(ع)۔۔۔۔ گر تو برا نہ مانے

ایام عزا اور نجات دہندہ بشریت

امام زین العابدین کی حیات طیبہ کا اجمالی تذکرہ

امام صادق (ع) کا مقام امام ابو حنیفہ کی زبانی

استقبال ماہ رمضان المبارک

کن فیکن

حکومت، اسکے تقاضے اور موجودہ حکمران

زیارات معصومینؑ کی مخالفت، ذہنی فتور ہے

دینی مدارس، غلط فہمیاں اور منفی پروپیگنڈہ

شناخت مجهولات کا منطقی راستہ

 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Monday 16 October 2017 - 09:39
Share/Save/Bookmark
کن فیکن
کن فیکن
 
 
اسلام ٹائمز: قافلہ آگے بڑھا۔۔۔ گھروں کی چھت سے برستے پتھروں اور تازیانوں کی بیچ سے "اشھدو ان محمد الرسول اللہ" کی گونج سے یک لحظہ سکوت ہوا اور الشام الشام الشام کی صدا بلند کرنیوالے فرزند صفا و مروہ نے حسن شہادت کی زیبا ترین تعبیر پیش کی۔۔۔ اس نے جو چاہا، جیسا چاہا، ویسا ہی ہوا، اسی خوبصورتی کیساتھ۔۔۔ اسی وقار کیساتھ۔۔۔ بےشک عزت و ذلت خدا ہی کیطرف سے ہے اور برستے ہوئے پتھروں اور تازیانوں کا رخ تبدیل کر دیا۔۔۔ محور کن یزیدیت کے چہرے سے نقاب نوچ کر پھر سے فیکن بنا اور عزت و وقار کیساتھ اربعین پر اپنے پیاروں سے ملنے کربلا جا پہنچا۔۔۔۔
 
 تحریر: بنت الہدیٰ

زیست کی تکمیل کا راز ہی نہیں بصیرتوں کا خمار بھی اسی کلمے میں سمٹا ہے۔ *کن* کا کلمہ۔۔ رب اعلٰی کے کن کہتے ہی وسیع و عریض کائنات خلق ہوگئی اور فیکن کا مظہر نور اول تا نور آخر جگمگاتا ہوا ماہتاب کو اندھیری رات میں روشن کیے رکھتا ہے، وہ کہتا جاتا ہے ہو جا اور ویسا ویسا ہوتا چلا جاتا ہے۔۔۔ جیسا اس نے کہا ویسا ہوگیا۔۔ ویسا ہوتا چلا آرہا یے۔۔ اور ویسا ہی ہوتا رہیگا۔۔ *کربلا* بھی اسی کن کا تسلسل ہے، اس کے کن کہتے ہی بہتّر پیاسے فیکن کا مظہر بن جاتے ہیں اور پیروں تلے روندی جانیوالی صحرا کی خاک خاک شفا بن جاتی ہے۔ وہ پھر کہتا ہے کن اور مظہر فیکن حالت اسارت میں طوق و زنجیر میں جکڑا کاروان لئے بے وفاوں کی سرزمین پر جا پہنچتا ہے۔۔۔ شہادت کے حسن کی تاب نہ لاتے ہوئے لوگوں کی آنکھیں چندھیاں جاتی ہیں۔۔۔ اور فیصلہ مشکل تر ہو جاتا ہے، آنکھیں اشکبار ہوتے ہی پھر ایک صدا گونجی۔۔۔ "کن"۔۔۔ لب کشاں ہوئے اور لہجہ سلونی کانوں سے ٹکراتے ہی ماتم کدہ بچھ گیا۔۔۔ اے بے وفا لوگوں یہ رمزیہ کلمہ تمہاری ناقص عقل میں نہیں سما سکتا کہ تمہاری رگوں میں دوڑنے والا لہو ابھی سرد ہے، وہ اسکی حرارت کو محسوس ہی نہیں کرسکتا۔۔۔

قافلہ آگے بڑھا۔۔۔ گھروں کی چھت سے برستے پتھروں اور تازیانوں کی بیچ سے "اشھدو ان محمد الرسول اللہ" کی گونج سے یک لحظہ سکوت ہوا اور الشام الشام الشام کی صدا بلند کرنے والے فرزند صفا و مروہ نے حسن شہادت کی زیبا ترین تعبیر پیش کی۔۔۔ اس نے جو چاہا، جیسا چاہا، ویسا ہی ہوا، اسی خوبصورتی کے ساتھ۔۔۔ اسی وقار کے ساتھ۔۔۔ بےشک عزت و ذلت خدا ہی کی طرف سے ہے اور برستے ہوئے پتھروں اور تازیانوں کا رخ تبدیل کر دیا۔۔۔ محور کن یزیدیت کے چہرے سے نقاب نوچ کر پھر سے فیکن بنا اور عزت و وقار کے ساتھ اربعین پر اپنے پیاروں سے ملنے کربلا جا پہنچا۔۔۔۔ سفر عشق پر گامزن یہ جمع غفیر اسی کن فیکن کا تسلسل ہے۔۔۔۔ مگر اب ابھی اک اور صدائے کن باقی ہے۔۔۔۔ "فیکن" منتظر ہے۔۔۔ اور میں اور آپ اس کن فیکن کی تکمیل کے اصل محرک۔۔۔ کہیں ایسا نہ ہو ہم بھی اس رمز سے بے بہرہ ہوکر گریہ و زاری میں ہی پناہ گاہیں تلاش کرتے رہیں۔۔۔ اور القارعہ ہمیں فنا کر دے۔۔۔ پس یاد رہے القارعہ بھی اسی ہونے والے کن کا سلسلہ ہے۔۔۔ جو حتمی ہے۔!!
 
خبر کا کوڈ: 676929