ڈیرہ اسماعیل خان میں شیعہ ٹارگٹ کلنگ کا ایک اور واقعہ، دن دیہاڑے بھرے بازار میں امام بارگاہ کا متولی قتلامریکہ نے بیت المقدس کے حوالے سے متنازع اقدام اُٹھا کر اپنے پائوں پر کلہاڑی ماری ہے، سینیٹر حافظ حمداللہامریکی صدر نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کر لیاڈونلڈ ٹرمپ کا امریکی سفارتخانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنیکا اعلانیمن کے سابق صدر علی عبداللہ صالح قتل / مکمل کہانی جلد ہی صرف اسلام ٹائمز پر ۔ ۔ ۔اسرائیل کا دمشق کے قریب ایرانی فوجی اڈے پر حملہ"محبین اہلبیت (ع) اور تکفیریت" بین الاقوامی کانفرنس کے شرکاء کی رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای سے ملاقاتہم نے اپنی حکمت اور دانائی سے تکفیریت کو گندگی کے ڈھیر پر پہنچا دیا، ہم آج 28 جماعتوں کی سربراہی کر رہے ہیں، علامہ ساجد نقویبریکنگ نیوز / سعودی ولی عہد پر قاتلانہ حملہ / مکمل خبر اسلام ٹائمز پر ملاحظہ کریںلاپتہ افراد کے حق میں آواز اُٹھانا جُرم بن گیا، ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل ناصر شیرازی کو اغواء کر لیا گیا
 
 
 

امام معصوم کے فضائل و کمالات

شیعت کے لبادہ میں برطانوی ایجنٹ یاسر الحبیب کے خطرناک کارنامے

شیر خدا کی شیر دل بیٹی حضرت زینبؑ

غلو اور غالیان ائمہ معصومین علیہم السلام کی نظر میں

معصومہ اہل بیتؑ

غلو، غالی اور مقصر

مقام مصطفٰی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

علم اخلاق اسلامی

اہداف بعثت پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

حضرت محمد رسول اللہﷺکی ذاتِ گرامی

یہ وعدہ خدا ہے، نام حسین (ع) تا ابد زندہ رہیگا

عقیدہ ختم نبوت

اسوہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور ہمارا معاشرہ

سامراء میں آئمہ اہلبیت کی مشکلات اور منجی بشریت

علوم و مراکز دینی کے احیاء میں امام رضا (ع) کا کردار

بعثت پیامبر (ص) کے اہداف و مقاصد

سفر گریہ

سفرِ عشق جاری ہے!

نجف سے کربلا۔۔۔ میں نے اسے کہا

زیارت امام حسین(ع)۔۔۔۔ گر تو برا نہ مانے

ایام عزا اور نجات دہندہ بشریت

امام زین العابدین کی حیات طیبہ کا اجمالی تذکرہ

امام صادق (ع) کا مقام امام ابو حنیفہ کی زبانی

استقبال ماہ رمضان المبارک

کن فیکن

حکومت، اسکے تقاضے اور موجودہ حکمران

زیارات معصومینؑ کی مخالفت، ذہنی فتور ہے

دینی مدارس، غلط فہمیاں اور منفی پروپیگنڈہ

شناخت مجهولات کا منطقی راستہ

 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Tuesday 13 February 2018 - 11:20
Share/Save/Bookmark
کراچی سمیت سندھ بھر میں میٹرک کے امتحان 29 مارچ اور انٹر کے 24 اپریل سے ہونگے
کراچی سمیت سندھ بھر میں میٹرک کے امتحان 29 مارچ اور انٹر کے 24 اپریل سے ہونگے
 
 
سندھ اسمبلی میں اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں اس بات پر زور دیا گیا کہ امتحانات میں نقل روکنے اور تعلیمی میدان میں بہتری لانے کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کئے جائیں، نقل کی روک تھام کیلئے مانیٹرنگ کمیٹیاں تشکیل دی جائیں، اساتذہ کو امتحانی ڈیوٹی دینے کیلئے پابند کیا جائے اور ڈیوٹی نہ دینے والوں کیخلاف سخت کارروائی کیجائے۔
 
اسلام ٹائمز۔ سندھ کے وزیر تعلیم و خواندگی جام مہتاب حسین ڈہر نے کہا ہے کہ امتحانات میں نقل کے رجحان کی حوصلہ شکنی اور تعلیمی نظام میں بہتری لانے کیلئے ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا، اس بار تعلیمی سال یکم اپریل جبکہ او، اے لیول اور کالجز کا تعلیمی سال یکم اگست 2018ء سے شروع کیا جائے گا۔ سندھ اسمبلی بلڈنگ میں تعلیم پر اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں سیکریٹری کالجز پرویز احمد سیہڑ ،اسپیشل سیکریٹری ایجوکیشن ناصر عباس، سندھ بھر کے تعلیمی بورڈز کے چیئرمین، ڈائریکٹر جنرل پرائیویٹ انسٹی ٹیوشنز، نجی تعلیمی اداروں کی تنظیموں کے نمائندوں، تعلیمی افسران اور ماہرین تعلیم نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا کہ جماعت اول سے جماعت سوئم تک تمام طلبا کو ان کی کارکردگی کا جائزہ لیتے ہوئے اگلی جماعتوں میں ترقی دی جائے گی۔ آٹھویں جماعت تک کے نتائج کا اعلان 31 مارچ تک کیا جائے گا، جبکہ نویں اور دسویں کے امتحانات 29 مارچ سے شروع ہونگے، جبکہ سندھ کے تعلیمی بورڈ نتائج کا اعلان 15 جولائی اور کراچی کے تعلیمی بورڈز نتائج کا اعلان 31 جولائی سے قبل کرنے کے پابند ہونگے۔ اس کے علاوہ گیارہویں اور بارہویں کے امتحانات 24 اپریل سے شروع ہونگے، نتائج کا اعلان 31 اگست تک جبکہ کراچی انٹرمیڈیٹ بورڈ 15 ستمبر تک نتائج کا اعلان کرے گا، امتحانات میں غیر تدریسی عملے کی ڈیوٹی نہیں لگائی جائے گی۔

اجلاس کو سیکریٹری کالجز پرویز احمد سیہڑ نے اسکولز اور کالجز کے موسم گرما، موسم سرما اور رمضان ٹائمنگ سے متعلق آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ موسم گرما کی تعطیلات یکم جون سے 31 جولائی تک، جبکہ موسم سرما کی تعطیلات 22 دسمبر سے 31 دسمبر تک کی جائیں گی۔
اسٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں اس بات پر زور دیا گیا کہ امتحانات میں نقل روکنے اور تعلیمی میدان میں بہتری لانے کیلئے تمام ممکنہ اقدامات کئے جائیں، نقل کی روک تھام کیلئے مانیٹرنگ کمیٹیاں تشکیل دی جائیں، اساتذہ کو امتحانی ڈیوٹی دینے کیلئے پابند کیا جائے اور ڈیوٹی نہ دینے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ اس موقع پر امتحانی ڈیوٹی دینے والے اساتذہ کے معاوضے میں اضافے پر بھی غور کیا گیا۔ اجلاس میں پرائیوٹ اسکولز کی جانب سے مارک شیٹوں اور سرٹیفکیٹ پر تصویر آویزاں کرنی کی تجویز بھی دی گئی، جسے جام مہتاب ڈھر نے منظور کر لیا۔
 
خبر کا کوڈ: 704456