ہر دور کے حکمرانوں نے سرائیکی وسیب کی محروم عوام کا استحصال کیا، کالعدم جماعتوں کیخلاف کارروائی نہ ہونیکے برابر ہے، علامہ ناصر عباسلودھراں کے قریب 2 رکشے ٹرین کی زد میں آگئے، 7 بچوں سمیت 8 افراد جاں بحقکراچی، فرید اور زکریا ایکسپریس میں تصادم، 17 افراد جاں بحق، ریسکیو کا کام جاریچوہدری نثار نے اپنی پریس کانفرنس کو مزید مشکوک کر دیا، جلسے کی اجازت نہیں تھی تو سکیورٹی کیوں دی گئی؟ ملک عامر ڈوگرحکمران اور سیاستدان بردباری کا مظاہرہ کریں، ملک مزید کسی بحران کا متحمل نہیں ہوسکتا، علامہ ساجد نقویکراچی، ناظم آباد میں مجلس عزا کے دوران تکفیری دہشتگردوں کی فائرنگ، چھ افراد شہید، متعدد زحمیکراچی، تکفیری دہشتگردوں نے خواتین کی مجلس عزا کے باہر موجود مردوں کو نشانہ بنایافوجی آمر پرویز مشرف نے بیلنس کی ظالمانہ پالیسی کو دوام دیتے ہوئے بغیر ثبوت و شواہد کے تحت تحریک جعفریہ پر پابندی لگائی، علامہ ساجد نقویڈیرہ غازی خان میں سی ٹی ڈی کی کارروائی، کالعدم داعش کے 8 دہشتگرد ہلاک، 3 فرارعمران خان نے اسلام آباد بند کرنے کیلئے جو رقم تقسیم کی ہے کہیں وہ ملک میں تخریب کاری اور دہشت گردی کی کاروائیوں میں استعمال نہ ہو، پیر محفوظ م
 
 
 
 
 
 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Wednesday 11 January 2017 - 20:53
Share/Save/Bookmark
کراچی سرکلر ریلوے کی راہ میں کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کی جائے گی، ناصر حسین شاہ
کراچی سرکلر ریلوے کی راہ میں کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کی جائے گی، ناصر حسین شاہ
 
 
سندھ سیکرٹریٹ میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے وزیر ٹرانسپورٹ سندھ نے کہا کہ سرکلر ریلوے روٹ پر تجاوزات خالی کردو نہیں تو جیل کی ہوا کھانے کے لئے تیار ہوجاؤ، ریلوے کی 43 کلومیٹر روٹ میں سے 8 کلومیٹر پر قبضہ ہے، تاہم اب سیاسی مداخلت بھی آڑے نہیں آئے گی۔
 
اسلام ٹائمز۔ سندھ کے وزیر ٹرانسپورٹ سید ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ سرکلر ریلوے کی راہ میں کوئی رکاوٹ برداشت نہیں کی جائے گی۔ سندھ سیکرٹریٹ میں سرکلر ریلوے کے حوالے وزیراعلیٰ سندھ کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں شرکت کے بعد میڈیا سے بات چیت میں انہوں نے قبضہ مافیا کو خبردار کرتے ہوئے کہا کہ سرکلر ریلوے روٹ پر تجاوزات خالی کردو نہیں تو جیل کی ہوا کھانے کے لئے تیار ہوجاؤ۔ انہوں نے کہا کہ ریلوے کی 43 کلومیٹر روٹ میں سے 8 کلومیٹر پر قبضہ ہے، تاہم اب سیاسی مداخلت بھی آڑے نہیں آئے گی۔ واضح رہے کہ اس منصوبے کے قبضہ شدہ فاصلے پر 4600 چھوٹے بڑے یونٹس تعمیر ہیں، جن میں رہائش پذیر ہزاروں لوگوں کو پہلے بھی کئی مرتبہ نوٹسز جاری کئے جاچکے ہیں۔
 
خبر کا کوڈ: 599240