کرم ایجنسی، پاک افغان سرحدی علاقہ غوزگڑی میں امریکی ڈرون حملہ، اب تک کوئی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ملی، ابتدائی رپورٹ"محبین اہلبیت (ع) اور تکفیریت" بین الاقوامی کانفرنس کیلئے مقالات کی کالامریکی ڈرون حملہ /شام میں حزب اللہ کے ۸ کمانڈو شہیددمشق المیدان اسکوائر میں خودکش دھماکہ / ۱۰ افراد شہید ۲۰ مجروحکابل میں امام بارگاہ کے قریب خودکش دھماکہ، 6 افراد جاں بحق اور متعدد زخمیکابل میں مسجد شیعیان پر دہشت گردوں کا حملہ / ۶ شہید ۳۳ زخمیافغانستان کو داعش کا گڑھ بنانا پاکستان کیخلاف امریکی سازش کا حصہ ہے، جنرل(ر) اسلم بیگکرم ایجنسی، سکیورٹی فورسز کی گاڑی پر یکے بعد دیگرے 2 بم دھماکے، 4 اہلکار زخمیشہید مدافع حرم محسن حججی کی تہران میں با شکوہ تشیع جنازہ / تفصیلی خبر جلد ہی اسلام ٹائمز پرسعودی لڑاکا طیاروں کی کاروائی ، یمن میں ایک ہی خاندان کے ۹ افراد جاں بحق
 
 
 

امام صادق (ع) کا مقام امام ابو حنیفہ کی زبانی

استقبال ماہ رمضان المبارک

کن فیکن

حکومت، اسکے تقاضے اور موجودہ حکمران

زیارات معصومینؑ کی مخالفت، ذہنی فتور ہے

دینی مدارس، غلط فہمیاں اور منفی پروپیگنڈہ

شناخت مجهولات کا منطقی راستہ

انسان کی شخصیت میں دوست کا کردار

اقبال اور تصورِ امامت (1)

روزے کا فلسفہ، چند معروضات

قیام امام حسینؑ کی اہمیت غیر مسلم دانشوروں کی نظر میں

امام حسین (ع) کے بارے میں آئمہ معصومین علیہم السلام کے ارشادات

تاریخ بشریت کا چمکتا ستارہ

فضیلت حضرت علیؑ غیر مسلم دانشوروں کی نظر میں

علی کی شیر دل بیٹی

حضرت فاطمۃالزہرا (س) بحیثیت آئیڈیل شخصیت

حضرت علی المرتضٰی۔ؑ ۔۔۔ شمعِ رسالت کا بےمثل پروانہ

زہراء (س) کیا کرے!

عظمت حضرت زہرا (س) غیر مسلم دانشوروں کی نظر میں

وہ جو اصلِ لفظ بہار ہے

انقلاب حسين بزبان حضرت امام حسين (ع)

محبت اہل بیت (ع)

مشہدالمقدس، مسافر خانہ حسینیہ شہید عارف الحسینی میں میرا قیام (آخری حصہ)

مکتب تشیع کے ترجمان؟

اسلام زندہ ہوتا ہے ہر کربلا کے بعد

الشام۔۔الشام۔۔الشام

معجزہ گر سپہ سالار

شہادتِ امام حسین (ع) کے مقاصد اور انکا حصول

آئیں حسینؑ کا غم مل کر منائیں

 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Wednesday 11 January 2017 - 21:23
Share/Save/Bookmark
جموں کے مسلمانوں کیساتھ کل ’’یومِ یکجہتی‘‘ منایا جائے، مشترکہ مزاحمتی قیادت
جموں کے مسلمانوں کیساتھ کل ’’یومِ یکجہتی‘‘ منایا جائے، مشترکہ مزاحمتی قیادت
 
 
قائدین نے کہا کہ بھارت نواز ٹولے نے ہمیشہ لاشوں پر ہی اقتدار کی کرسی حاصل کی ہے، جس طرح آج انتہا پسند جنونی بھارتی حکمران الیکشن کے موقعے پر اقلیتوں خاص کر مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیل کر اپنے ووٹروں کی تسکین کا سامان فراہم کرکے اقتدار کے ایوان تک رسائی حاصل کرتے ہیں۔
 
اسلام ٹائمز۔ مقبوضہ کشمیر کی مشترکہ آزادی پسند قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے جموں میں مسلمان بستیوں پر ہو رہے حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی۔ انہوں نے جموں و کشمیر کے مقامات بشمول وادی چناب، جموں، ودای گول گلاب گڑھ، پونچھ، راجوری، بانہال، ڈوڈہ، کشتواڑ، بدرواہ، رام بن، ادھمپور، کرناہ، اوڑی، گریز وغیرہ میں رہنے والے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ کل جمعتہ المبارک کو نماز کے بعد ’’یومِ یکجہتی جموں‘‘ کی مناسبت سے پُرامن احتجاج کریں۔ مزاحمتی قائدین نے کہا کہ گزشتہ ستر سال سے جموں کے مسلمان کو خوف و ہراس کے ماحول میں زندگی گزارنے پر مجبور کیا جا رہا ہے۔ 1947ء میں پانچ لاکھ مسلمانوں کی گردن زنی کر کے انسانی لہو کے پیاسوں کو تسکین نہیں ہوئی، اس لئے وہ کبھی ایک اور کبھی دوسرے بہانے ان کو صفحہ ہستی سے مٹانے میں مصروف ہیں۔ مقبوضہ کشمیر کے مزاحمتی قائدین نے کہا کہ کٹھوعہ کے مسلمانوں کے غم میں ریاستی اسمبلی میں ٹسوے بہانے والے غداروں کے آباء و اجداد نے اپنی آنکھوں کے سامنے لاکھوں مسلمانوں کو قتل ہوتے دیکھا۔ اُن کی دردناک چیخیں اور آہ و بکا اپنے کانوں سے سنی لیکن کرسی کی لالچ میں اپنے ضمیر کا سودا کرنے والے بھارتی سفاکیت کی کلہاڑی کے یہ مقامی دستے خاموش بت بنے رہے، نہ تو ان کی انسانی حس ہی جاگی اور نہ ہی کشمیریوں کا گرتا ہوا لہو ان کو اپنی طرف متوجہ کرسکا۔

قائدین نے کہا کہ بھارت نواز ٹولے نے ہمیشہ لاشوں پر ہی اقتدار کی کرسی حاصل کی ہے، جس طرح آج انتہا پسند جنونی بھارتی حکمران الیکشن کے موقعے پر اقلیتوں خاص کر مسلمانوں کے خون سے ہولی کھیل کر اپنے ووٹروں کی تسکین کا سامان فراہم کرکے اقتدار کے ایوان تک رسائی حاصل کرتے ہیں، اسی طرح ان کے تربیت یافتہ مقامی دلالوں کی یہ کھیپ قتل و غارتگری اور تباہی و بربادی کے کھنڈرات پر اپنے اقتدار کے محل تعمیر کرتے رہتے ہیں۔ آزادی پسند قائدین نے کہا کہ جس ایوان میں سینکڑوں بے گناہوں کے خون آلود قبائیں زیب تن کئے ہوئے سفاکوں کی فوج ہی مقتولوں کے لئے قوانین بنا رہے ہوں، وہاں کسی خیر کی کوئی امید رکھنا عبث ہے۔ انہوں نے کہا کہ آئے روز مگر مچھ کے آنسو بہاکر خود کو پارسا ثابت کرنے کی ڈراموں سے ریاست جموں و کشمیر کے عوام اچھی طرح واقف ہیں، کیونکہ ان تمام مکاروں پر معصوموں کے خون کے دھبے عیاں ہیں اور وہ چاہتے ہوئے بھی اس کو چھپانے میں کامیاب نہیں ہوسکتے۔ جموں کے مسلمانوں کے ساتھ کل یومِ یکجہتی منانے کی اپیل کرتے ہوئے قائدین نے کہا کہ نماز جمعہ کے بعد پُرامن احتجاج کے ذریعے ہم بحیثیت قوم جموں کے اپنے بھائیوں کو ایک واضح پیغام دینا چاہتے ہیں کہ ہم سب ایک جسدِ خاکی کی طرح یکسو ہیں اور آپ پر آئی کوئی بھی آفت ہم سب کے لیے سوہان روح ہے۔
 
خبر کا کوڈ: 599216