سعودی لڑاکا طیاروں کی کاروائی ، یمن میں ایک ہی خاندان کے ۹ افراد جاں بحقکرم ایجنسی میں ڈرون حملہ، 3 دہشت گرد ہلاکبرما کے بے گھر مسلمانوں کیلئے ایران کا امدادی کاروان روانہ / آج پہلی امدادی کھیپ بنگلہ دیش روانہ کر دی گئیایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے روس کا دورہ کیا / سوچی میں ولادیمیر پوٹین سے ملاقاتبرما کے مسئلہ کا حل مسلمان ممالک کی عملی مداخلت سے حل ہو گا، رہبر معظم انقلاب اسلامیرہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی امام خامنہ ای نے اب سے چند گھنٹے پہلے اپنے درس فقہ میں برما کے مسلمانوں پر ہونے والے ظلم کی شدید الفاظ میں شامی فوج اور مقاومتی فورسز کی پیشقدمی، دیرالزور کا فوجی ہوائی اڈہ آزادوزیر خارجہ پاکستان کی جناب آقای روحانی صدر جمہوری اسلامی ایران سے ملاقات / دو جانبہ مسائل پر گفتگوخواجہ آصف کی ایران آمد / وزیر خارجہ محمد جواد ظریف سے ملاقاتشام صوبہ دیرالزور سے داعش کا مکمل خاتمہ / متحدہ فورسز کا جبل الثردہ پر کنٹرول
 
 
 
 
 
 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Wednesday 11 January 2017 - 22:23
Share/Save/Bookmark
گلگت، نوید حسین کی نماز جنازہ مرکزی امامیہ جامع مسجد میں ادا کر دی گئی
گلگت، نوید حسین کی نماز جنازہ مرکزی امامیہ جامع مسجد میں ادا کر دی گئی
 
 
2006ء میں انسداد دہشتگردی جی بی کی عدالت کے جج جمشید جنجوعہ کے قتل کا الزام ان پر عائد کیا گیا جبکہ یہ اسوقت جیل میں تھے۔
 
اسلام ٹائمز۔ اڈیالہ جیل راولپنڈی میں گذشتہ روز پھانسی کی سزا پانیوالے گلگت کے نوجوان نوید حسین کی نماز جنازہ مرکزی امامیہ جامع مسجد گلگت میں ادا کی گئی۔ معروف عالم دین اور خطیب حجت الاسلام آغا راحت حسین الحسینی کی اقتداء میں نماز جنازہ ادا کی گئی۔ نوید حسین کے جنازے میں ہزاروں افراد نے شرکت کی اور انکی مظلومانہ موت پر گہرے دکھ کا اظہار کیا گیا۔ نماز جنازہ کے بعد انکے جسد خاکی کو انکے آبائی گاوں بارگو گلگت روانہ کر دیا گیا، جہاں آہوں اور سسکیوں کے ساتھ انکی تدفین ہوگئی۔ جنازے کے شرکاء نے نوید حسین کی پھانسی کو جانبدارانہ اور ماورائے قانون قرار دیتے ہوئے حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔ واضح رہے کہ گلگت میں آغا ضیاءالدین رضوی کی شہادت کے بعد انہیں گرفتار کیا گیا تھا اور یہ اسوقت سے ابتک جیل میں قید تھے۔ 2006ء میں انسداد دہشتگردی جی بی کی عدالت کے جج جمشید جنجوعہ کے قتل کا الزام ان پر عائد کیا گیا، جبکہ یہ اسوقت جیل میں تھے۔ اس سلسلے میں پولیس نے موقف اپنایا کہ نوید حسین نے جیل سے نکل کر جج کو قتل کرکے دوبارہ جیل میں پناہ لی ہے۔ اس بےبنیاد الزام پر انہیں پھانسی کی سزا سنا دی گئی اور گذشتہ روز انہیں پھانسی دی گئی۔
 
خبر کا کوڈ: 599194