پاراچنار بڑی تباہی سے بچ گیا، افغانستان سے آنے والی بارود سے بھری گاڑی پر بورکی بارڈر کے قریب فورسز کی فائرنگ، گاڑی دھماکے سے تباہکرم ایجنسی کے قریب افغانستان کے علاقے نری کنڈوں پر امریکی جیٹ طیاروں کی بمباری 16 افغان طالبان ہلاک، کئی شدید زخمی، افغان ذرائعپاراچنار بم دھماکے کا ایک اور زخمی کفایت حسین شہید ہوگیا، یوں بم دھماکے کے شہداء کی تعداد 26 ہوگئیپاراچنار، افغانستان کی سرحدی علاقے سے پاراچنار کے نواحی علاقوں پر یکے بعد دیگرے دو میزائل فائرپارا چنار پھر لہو لہو، امام بارگاہ کے قریب زوردار دھماکہ، خواتین و بچوں سمیت 22 افراد شہید، 55 سے زائد زخمیپاراچنار، دھماکہ کیخلاف احتجاج کرنیوالے مظاہرین پر فورسز کی فائرنگ، 2 افراد شہید، 9 زخمیپاراچنار، پاک افغان سرحد پر متھہ سنگر کے قریب ڈرون حملہ، متعدد ہلاکتوں کی اطلاعہر دور کے حکمرانوں نے سرائیکی وسیب کی محروم عوام کا استحصال کیا، کالعدم جماعتوں کیخلاف کارروائی نہ ہونیکے برابر ہے، علامہ ناصر عباسلودھراں کے قریب 2 رکشے ٹرین کی زد میں آگئے، 7 بچوں سمیت 8 افراد جاں بحقکراچی، فرید اور زکریا ایکسپریس میں تصادم، 17 افراد جاں بحق، ریسکیو کا کام جاری
 
 
 
 
 
 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Wednesday 11 January 2017 - 18:44
Share/Save/Bookmark
پاکستان کو ایران سعودی کشیدگی میں فریق نہیں بننا چاہیئے، صاحبزادہ حامد رضا
پاکستان کو ایران سعودی کشیدگی میں فریق نہیں بننا چاہیئے، صاحبزادہ حامد رضا
 
 
سنی اتحاد کونسل کے تھنک ٹینک کے ماہانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین کا کہنا تھا کہ رانا ثناءاللہ نے دہشت گردوں کو خوش کرنے کیلئے فوجی عدالتوں پر تنقید کی، فوجی عدالتوں کو توسیع دینا ملکی مفاد میں ہے کیونکہ فوجی عدالتوں کے جرأت مندانہ فیصلوں سے دہشتگردوں پر خوف طاری ہوا ہے، دہشتگردی کے فکری ہمدرد فوجی عدالتوں کی مخالفت کر رہے ہیں۔
 
اسلام ٹائمز۔ سنی اتحاد کونسل کے تھنک ٹینک کے ماہانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ مسلم فوجی اتحاد کا سربراہ بننے کیلئے جنرل (ر) راحیل شریف کی شرائط خوش آئند ہیں، پاناما زدہ حکمران جیل جانے کیلئے تیار ہو جائیں، پاکستان کو ایران سعودی کشیدگی میں فریق نہیں بننا چاہیئے، رانا ثناءاللہ نے دہشت گردوں کو خوش کرنے کیلئے فوجی عدالتوں پر تنقید کی، فوجی عدالتوں کو توسیع دینا ملکی مفاد میں ہے کیونکہ فوجی عدالتوں کے جرأت مندانہ فیصلوں سے دہشتگردوں پر خوف طاری ہوا ہے، دہشتگردی کے فکری ہمدرد فوجی عدالتوں کی مخالفت کر رہے ہیں۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ متناسب نمائندگی کا نظام رائج ہو نا چاہیئے، الیکشن کمیشن کو مالی و انتظامی طور پر آزاد اور خود مختار بنانے کیلئے قانون سازی کی جائے، پانامہ زدہ حکمران عبرتناک انجام کی طرف بڑھ رہے ہیں، کھاد پر سبسڈی ختم کرنا کسان دشمنی ہے، خادم اعلیٰ کے بلند بانگ دعوؤں کے باوجود تھانہ کلچر تبدیل نہیں ہوا، بیرون ممالک سے لوٹ مار کا پیسہ پاکستان واپس لاکر غیر ملکی قرضے ادا کئے جا سکتے ہیں۔ چیئرمین سنی اتحاد کونسل کا مزید کہنا تھا کہ آئندہ الیکشن میں ہر حلقے میں امیدوار کھڑا کریں گے، انتخابی میدان عوام دشمن قوتوں کیلئے کھلا نہیں چھوڑیں گے، 63,62 پر عمل کرنا لازمی آئینی لازمی تقاضا ہے، تارکین وطن کو ووٹ کا حق دیا جائے۔ سنی اتحاد کونسل انتخابی اصطلاحات کیلئے اپنی تجاویز حکومت اور اپوریشن لیڈر کو بھجوائے گی، انتخابی اصطلاحات کے بغیر آئندہ الیکشن شفاف نہیں ہو سکتے۔
 
خبر کا کوڈ: 599193