پاراچنار بم دھماکے کا ایک اور زخمی کفایت حسین شہید ہوگیا، یوں بم دھماکے کے شہداء کی تعداد 26 ہوگئیپاراچنار، افغانستان کی سرحدی علاقے سے پاراچنار کے نواحی علاقوں پر یکے بعد دیگرے دو میزائل فائرپارا چنار پھر لہو لہو، امام بارگاہ کے قریب زوردار دھماکہ، خواتین و بچوں سمیت 22 افراد شہید، 55 سے زائد زخمیپاراچنار، دھماکہ کیخلاف احتجاج کرنیوالے مظاہرین پر فورسز کی فائرنگ، 2 افراد شہید، 9 زخمیپاراچنار، پاک افغان سرحد پر متھہ سنگر کے قریب ڈرون حملہ، متعدد ہلاکتوں کی اطلاعہر دور کے حکمرانوں نے سرائیکی وسیب کی محروم عوام کا استحصال کیا، کالعدم جماعتوں کیخلاف کارروائی نہ ہونیکے برابر ہے، علامہ ناصر عباسلودھراں کے قریب 2 رکشے ٹرین کی زد میں آگئے، 7 بچوں سمیت 8 افراد جاں بحقکراچی، فرید اور زکریا ایکسپریس میں تصادم، 17 افراد جاں بحق، ریسکیو کا کام جاریچوہدری نثار نے اپنی پریس کانفرنس کو مزید مشکوک کر دیا، جلسے کی اجازت نہیں تھی تو سکیورٹی کیوں دی گئی؟ ملک عامر ڈوگرحکمران اور سیاستدان بردباری کا مظاہرہ کریں، ملک مزید کسی بحران کا متحمل نہیں ہوسکتا، علامہ ساجد نقوی
 
 
 
 
 
 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Tuesday 10 January 2017 - 20:28
Share/Save/Bookmark
کروز میزائل بابر تھری کا کامیاب تجربہ پوری قوم کیلئے باعث فخر ہے، علامہ راجا ناصر عباس
کروز میزائل بابر تھری کا کامیاب تجربہ پوری قوم کیلئے باعث فخر ہے، علامہ راجا ناصر عباس
 
 
پہلے کروزز میزائل کی کامیابی پر سائنسدانوں، انجنیئرز اور قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی سیکرٹری جنرل نے کہا ہے کہ یہ تجربہ اس حقیقت کا عکاس ہے کہ ہم اپنے دفاع سے لمحہ بھر بھی غافل نہیں اور ہمارے مایہ ناز باصلاحیت سائنسدان دنیا میں کسی سے بھی پیچھے نہیں۔
 
اسلام ٹائمز۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجا ناصر عباس جعفری نے آبدوز سے فائر کیے جانے والے پہلے کروز میزائل بابر تھری کے کامیاب تجربے پر سائنسدانوں، انجینئرز اور قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ کامیابی پوری قوم کے لیے باعث فخر ہے۔ ہمارے وطن عظیم کا دفاع ناقابل تسخیر اور مضبوط ہاتھوں میں ہے۔ کسی بھی ملک میں یہ جرات نہیں کہ وہ مادر وطن کی طرف میلی آنکھ اٹھا کر دیکھے۔ انہوں نے کہا کہ یہ تجربہ اس حقیقت کا عکاس ہے کہ ہم اپنے دفاع سے لمحہ بھر بھی غافل نہیں اور ہمارے مایہ ناز باصلاحیت سائنسدان دنیا میں کسی سے بھی پیچھے نہیں۔ خطے میں طاقت کے توازن کو قائم رکھنے کے لیے کامیابیوں کا یہ سفر مزید تیزی سے جاری رہنا چاہیے۔ انہوں نے کہا جدید سائنسی علوم اور دفاعی ترقی کے لیے ترقی یافتہ ممالک سے سمجھوتے کیئے جانے چاہیے۔ پاکستان میں تعلیم کے شعبہ میں خصوصی توجہ سے ہر سال ہزاروں ماہرین پیدا کیے جاتے سکتے ہیں۔
 
خبر کا کوڈ: 598904