پاراچنار، نئی سبزی منڈی میں دھماکہ، 12 افراد شہید جبکہ درجنوں زخمیلودھراں کے قریب 2 رکشے ٹرین کی زد میں آگئے، 7 بچوں سمیت 8 افراد جاں بحقکراچی، فرید اور زکریا ایکسپریس میں تصادم، 17 افراد جاں بحق، ریسکیو کا کام جاریچوہدری نثار نے اپنی پریس کانفرنس کو مزید مشکوک کر دیا، جلسے کی اجازت نہیں تھی تو سکیورٹی کیوں دی گئی؟ ملک عامر ڈوگرحکمران اور سیاستدان بردباری کا مظاہرہ کریں، ملک مزید کسی بحران کا متحمل نہیں ہوسکتا، علامہ ساجد نقویکراچی، ناظم آباد میں مجلس عزا کے دوران تکفیری دہشتگردوں کی فائرنگ، چھ افراد شہید، متعدد زحمیکراچی، تکفیری دہشتگردوں نے خواتین کی مجلس عزا کے باہر موجود مردوں کو نشانہ بنایافوجی آمر پرویز مشرف نے بیلنس کی ظالمانہ پالیسی کو دوام دیتے ہوئے بغیر ثبوت و شواہد کے تحت تحریک جعفریہ پر پابندی لگائی، علامہ ساجد نقویڈیرہ غازی خان میں سی ٹی ڈی کی کارروائی، کالعدم داعش کے 8 دہشتگرد ہلاک، 3 فرارعمران خان نے اسلام آباد بند کرنے کیلئے جو رقم تقسیم کی ہے کہیں وہ ملک میں تخریب کاری اور دہشت گردی کی کاروائیوں میں استعمال نہ ہو، پیر محفوظ م
 
 
 
 
 
 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Tuesday 10 January 2017 - 17:06
Share/Save/Bookmark
سعودی فوجی اتحاد میں راحیل شریف کی شرکت سے ضیاء الحق کا نفرتوں بھرا دور واپس آسکتا ہے، حامد میر
سعودی فوجی اتحاد میں راحیل شریف کی شرکت سے ضیاء الحق کا نفرتوں بھرا دور واپس آسکتا ہے، حامد میر
 
 
نجی چینل کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے معروف صحافی نے تاکید کی کہ ایران اور سعودی عرب کو سی پیک میں شامل کرنا چاہیئے تاکہ ان دونوں ممالک میں قربتیں بڑھ جائیں، لیکن اگر پاکستان سعودی فورس میں شامل ہوتا ہے اور راحیل شریف اس کے کمانڈر انچیف بن جاتے ہیں تو ہم کئی سال پیچھے چلے جائیں گے۔
 
اسلام ٹائمز۔ معروف صحافی حامد میر نے نجی چینل "زیم ٹی وی" کے ایک پروگرام میں جنرل راحیل شریف کے سعودی اتحادی فوج کے کمانڈر انچیف بننے کی خبروں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر جنرل راحیل شریف اس کولیشن کے کمانڈر انڈر چیف بنتے ہیں تو ان کی اپنی انفرادی طور پر تو کوئی حیثیت نہیں ہے، ان کی اہمیت تو آرمی چیف کی وجہ سے ہے، اگر وہ اس کولیشن کے کمانڈر انچیف بنتے ہیں تو ظاہر ہے پاکستان سے یہ توقع کی جائے گی کہ وہ اپنے ریٹائرڈ فوجی وہاں بھیجے۔ حامد میر کا کہنا تھا کہ اس صورتحال کی وجہ سے مڈل ایسٹ کی بھڑکی ہوئی آگ کے شعلے پاکستان میں آسکتے ہیں، جب کہ ہم تو پہلے ہی بہت مسائل میں پھنسے ہوئے ہیں، ہمیں قوم کو فرقہ وارانہ آگ سے محفوظ رکھنا چاہیئے۔ انہوں نے تاکید کی کہ ایران اور سعودی عرب کو سی پیک میں شامل کرنا چاہیئے، تاکہ ان دونوں ممالک میں قربتیں بڑھ جائیں، اگر پاکستان سعودی اتحادی فوج میں شامل ہوتا ہے اور راحیل شریف اس کے کمانڈر انچیف بن جاتے ہیں تو ہم کئی سال پیچھے چلے جائیں گے اور جو ضیاء الحق نے نفرتیں پھیلائی تھی وہ دور واپس بھی آسکتا ہے۔
 
خبر کا کوڈ: 598833