پاراچنار بڑی تباہی سے بچ گیا، افغانستان سے آنے والی بارود سے بھری گاڑی پر بورکی بارڈر کے قریب فورسز کی فائرنگ، گاڑی دھماکے سے تباہکرم ایجنسی کے قریب افغانستان کے علاقے نری کنڈوں پر امریکی جیٹ طیاروں کی بمباری 16 افغان طالبان ہلاک، کئی شدید زخمی، افغان ذرائعپاراچنار بم دھماکے کا ایک اور زخمی کفایت حسین شہید ہوگیا، یوں بم دھماکے کے شہداء کی تعداد 26 ہوگئیپاراچنار، افغانستان کی سرحدی علاقے سے پاراچنار کے نواحی علاقوں پر یکے بعد دیگرے دو میزائل فائرپارا چنار پھر لہو لہو، امام بارگاہ کے قریب زوردار دھماکہ، خواتین و بچوں سمیت 22 افراد شہید، 55 سے زائد زخمیپاراچنار، دھماکہ کیخلاف احتجاج کرنیوالے مظاہرین پر فورسز کی فائرنگ، 2 افراد شہید، 9 زخمیپاراچنار، پاک افغان سرحد پر متھہ سنگر کے قریب ڈرون حملہ، متعدد ہلاکتوں کی اطلاعہر دور کے حکمرانوں نے سرائیکی وسیب کی محروم عوام کا استحصال کیا، کالعدم جماعتوں کیخلاف کارروائی نہ ہونیکے برابر ہے، علامہ ناصر عباسلودھراں کے قریب 2 رکشے ٹرین کی زد میں آگئے، 7 بچوں سمیت 8 افراد جاں بحقکراچی، فرید اور زکریا ایکسپریس میں تصادم، 17 افراد جاں بحق، ریسکیو کا کام جاری
 
 
 
 
 
 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Tuesday 10 January 2017 - 09:34
Share/Save/Bookmark
پشاور میں تباہی کا بڑا منصوبہ ناکام، 15 کلو وزنی بم ناکارہ بنا دیا گیا
پشاور میں تباہی کا بڑا منصوبہ ناکام، 15 کلو وزنی بم ناکارہ بنا دیا گیا
 
 
بم ڈسپوزل حکام کے مطابق سلنڈر میں 14 سے 15 کلو گرام بارودی مواد اور بال بیئرنگز نصب کئے گئے تھے۔ جسے ٹائم ڈیوائس سے منسلک کیا گیا تھا۔ ایس ایس پی آپریشنز سجاد خان کے مطابق نامعلوم دہشت گردوں نے عام شہریوں کو نشانہ بنانے کے لئے ایسے مقام پر بم رکھا تھا۔
 
اسلام ٹائمز۔ پشاور پولیس اور بم ڈسپوزل یونٹ نے تباہی کے بڑے منصوبے کو ناکام بناتے ہوئے گیس سلنڈر میں نصب 15 کلو گرام وزنی بم ناکارہ بنا دیا۔ دوسری جانب پولیس نے علاقہ میں سرچ آپریشن بھی کیا، جس کے دوران متعدد مشکوک افراد کو حراست میں لے کر پوچھ گچھ کے لئے تھانہ منتقل کردیا۔ پیر کی صبح تھانہ حیات آباد پولیس کو اطلاع ملی کہ کارخانو مارکیٹ میں جی بی پلازہ کے قریب سڑک کنارے کافی دیر سے مشکوک ہتھ ریڑی کھڑی ہے، جس میں کیریٹ اور مالٹے وغیرہ پڑے ہیں۔ جس پر پولیس کی بھاری نفری نے موقع پر پہنچ کر علاقہ کا محاصرہ کردیا اور کارخانو روڈ کو دونوں اطراف سے ٹریفک اور عام آمدورفت کے لئے بند کرکے بی ڈی یو عملے کو طلب کرلیا۔ جنہوں نے ہتھ ریڑی میں مالٹوں کے نیچے چھپائے گئے گیس سلنڈر کو نکال کر اس میں بارودی مواد کی موجودگی کی تصدیق کرتے ہوئے واٹر چارج کے ذریعہ ناکارہ بنا دیا۔ بم ڈسپوزل حکام کے مطابق سلنڈر میں 14 سے 15 کلو گرام بارودی مواد اور بال بیئرنگز نصب کئے گئے تھے۔ جسے ٹائم ڈیوائس سے منسلک کیا گیا تھا۔ ایس ایس پی آپریشنز سجاد خان کے مطابق نامعلوم دہشت گردوں نے عام شہریوں کو نشانہ بنانے کے لئے ایسے مقام پر بم رکھا تھا، جہاں پر معمول کے مطابق شہریوں کی  آمدورفت بہت ذیادہ ہوتی ہے، اگر بم کو بروقت کارروائی کے دوران ناکارہ نہ بنایا جاتا تو اس سے بڑے پیمانے پر تباہی ہوسکتی  تھی۔
 
خبر کا کوڈ: 598732