ڈیرہ اسماعیل خان میں شیعہ ٹارگٹ کلنگ کا ایک اور واقعہ، دن دیہاڑے بھرے بازار میں امام بارگاہ کا متولی قتلامریکہ نے بیت المقدس کے حوالے سے متنازع اقدام اُٹھا کر اپنے پائوں پر کلہاڑی ماری ہے، سینیٹر حافظ حمداللہامریکی صدر نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کر لیاڈونلڈ ٹرمپ کا امریکی سفارتخانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنیکا اعلانیمن کے سابق صدر علی عبداللہ صالح قتل / مکمل کہانی جلد ہی صرف اسلام ٹائمز پر ۔ ۔ ۔اسرائیل کا دمشق کے قریب ایرانی فوجی اڈے پر حملہ"محبین اہلبیت (ع) اور تکفیریت" بین الاقوامی کانفرنس کے شرکاء کی رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای سے ملاقاتہم نے اپنی حکمت اور دانائی سے تکفیریت کو گندگی کے ڈھیر پر پہنچا دیا، ہم آج 28 جماعتوں کی سربراہی کر رہے ہیں، علامہ ساجد نقویبریکنگ نیوز / سعودی ولی عہد پر قاتلانہ حملہ / مکمل خبر اسلام ٹائمز پر ملاحظہ کریںلاپتہ افراد کے حق میں آواز اُٹھانا جُرم بن گیا، ایم ڈبلیو ایم کے مرکزی ڈپٹی سیکرٹری جنرل ناصر شیرازی کو اغواء کر لیا گیا
 
 
 

امام معصوم کے فضائل و کمالات

شیعت کے لبادہ میں برطانوی ایجنٹ یاسر الحبیب کے خطرناک کارنامے

شیر خدا کی شیر دل بیٹی حضرت زینبؑ

غلو اور غالیان ائمہ معصومین علیہم السلام کی نظر میں

معصومہ اہل بیتؑ

غلو، غالی اور مقصر

مقام مصطفٰی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

علم اخلاق اسلامی

اہداف بعثت پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم

حضرت محمد رسول اللہﷺکی ذاتِ گرامی

یہ وعدہ خدا ہے، نام حسین (ع) تا ابد زندہ رہیگا

عقیدہ ختم نبوت

اسوہ رسول صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور ہمارا معاشرہ

سامراء میں آئمہ اہلبیت کی مشکلات اور منجی بشریت

علوم و مراکز دینی کے احیاء میں امام رضا (ع) کا کردار

بعثت پیامبر (ص) کے اہداف و مقاصد

سفر گریہ

سفرِ عشق جاری ہے!

نجف سے کربلا۔۔۔ میں نے اسے کہا

زیارت امام حسین(ع)۔۔۔۔ گر تو برا نہ مانے

ایام عزا اور نجات دہندہ بشریت

امام زین العابدین کی حیات طیبہ کا اجمالی تذکرہ

امام صادق (ع) کا مقام امام ابو حنیفہ کی زبانی

استقبال ماہ رمضان المبارک

کن فیکن

حکومت، اسکے تقاضے اور موجودہ حکمران

زیارات معصومینؑ کی مخالفت، ذہنی فتور ہے

دینی مدارس، غلط فہمیاں اور منفی پروپیگنڈہ

شناخت مجهولات کا منطقی راستہ

 
نیوز لیٹر کیلئے اپنا ای میل ایڈریس لکھیں.
 
 
Monday 12 February 2018 - 14:22
Share/Save/Bookmark
پشاور، تربیت اولاد کے موضوع پر ایک پربرکت پروگرام کا انعقاد
پشاور، تربیت اولاد کے موضوع پر ایک پربرکت پروگرام کا انعقاد
 
 
اسلام ٹائمز: متحدہ اہلحدیث کے مرکزی چیئرمین علامہ سید ضیاء اللہ شاہ بخاری نے سیدہ کونین جناب فاطمۃ الزہرا سلام اللہ علیھا اور حسنین کریمین علیہم السلام کی شخصیت اور انکی سیرت و کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ان شخصیات کی تربیت انکے بابا نے کچھ ایسے انداز میں کی کہ بچپن ہی سے جبکہ وہ ابھی مکلف ہی نہیں تھے، انہیں حلال و حرام کی تمیز سکھا دی۔
 
رپورٹ: ایس این حسینی

متحدہ جمعیت اہل حدیث پاکستان کے صوبائی چیف آرگنائزر علامہ مقصود احمد سلفی نے اپنی صاحبزادی کی جانب سے قرآن مجید حفظ کرنے کی خوشی میں 30 جنوری کو ایان گیدرنگ ہال پشاور میں ایک کانفرنس کا اہتمام کیا، جس کا عنواں تھا "تربیت اولاد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم اور خاتون جنت جناب فاطمہ زہراء سلام اللہ علیہا کی سیرت کی روشنی میں۔" اس کانفرنس میں راقم الحروف سمیت صوبہ بھر کے جید علمائے کرام اور دیگر سیاسی شخصات نے شرکت کی۔ پروگرام کا آغاز رات 8 بجے تلاوت کلام پاک سے کیا گیا۔ جامعۃ الشہید عارف الحسینی کے استاد علامہ عابد حسین شاکری کے فرزند ارجمند قاری محمد جواد نے قرآن مجید کی تلاوت کے بعد اپنے بھائی جناب علی ھادی کے ہمراہ اسماء الحسنٰی کا زمزمہ کرکے شرکائے محفل سے زبردست داد وصول کی۔ اسکے بعد متعدد علمائے کرام نے مجمع سے خطاب کیا، تاہم تین گھنٹے کے اس پربرکت پروگرام میں علامہ عابد حسین شاکری، جلسے کے مہتمم علامہ مقصود احمد سلفی اور متحدہ اہلحدیث پاکستان کے چیئرمین جناب علامہ سید ضیاء اللہ شاہ بخاری کے خطابات انتہائی اہمیت کے حامل ثابت ہوئے۔

علامہ عابد شاکری نے علامہ مقصود سلفی کو ان کی صاحبزادی کی جانب سے قرآن مجید حفظ کرنے پر مبارکباد دی اور خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ آج کے اس دور میں، جبکہ لوگوں کی توجہ کا مرکز صرف اور صرف انگریزی تعلیم ہے، علامہ صاحب کی یہ کوشش نہایت ہی مستحسن اور قابل تعریف ہے۔ قرآن مجید کی آیہ قو انفسکم و اھلیکم نارا، کی تفسیر بیان کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہر مومن کا یہ فرض بنتا ہے کہ اپنے آپ کو اور ساتھ ہی اپنے پورے خانوادے کو جہنم کی آگ سے بچا کر رکھے۔ تاہم آتش جہنم سے بچانے کا واحد راستہ خود اور اپنے خانوادے کی زندگی کو قرآن مجید کے اصولوں کے مطابق ڈھالنا ہے۔ انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ مسلمانوں کی اکثریت قرآن سے ناآشنا ہے، یہاں تک کہ اگر کوئی قرآن سیکھ بھی لے، تو وہ صرف تلاوت ہی پر اکتفا کرتا ہے، جبکہ قرآن مجید صرف تلاوت اور پڑھے جانے کے واسطے نازل نہیں ہوا، بلکہ عمل کرنے کے لئے نازل ہوا ہے، جبکہ عمل اس پر تب ہی ممکن ہے، جب اسکے مطالب سمجھنے کی صلاحیت حاصل ہو۔ انہوں نے علمائے کرام کی توجہ اس طرف مبذول کراتے ہوئے کہا کہ علماء کا متفقہ فریضہ بنتا ہے کہ لوگوں کو قرآن کریم کی تلاوت کے ساتھ ساتھ انہیں اس کے ترجمے اور تفسیر کی جانب راغب کرا دیں۔اتحاد امت کا تذکرہ کرتے ہوئے انہوں نے قرآن مجید کی تعلیمات کی روشنی میں اسکی ضرورت اور اہمیت کو اجاگر کیا اور کہا کہ امت مسلمہ کی بدبختی کی واحد وجہ انکے درمیان پائے جانے والے اختلافات ہیں۔ انہوں نے علمائے کرام پر زور دیا کہ عوام کو اتحاد کا درس دیں۔

علامہ مقصود سلفی کا اپنے خطاب کے دوران کہنا تھا کہ اس کانفرنس کا مقصد ایک طرف تو لوگوں کو قرآن کی اہمیت بیان کرکے انہیں کتاب خدا کی جانب راغب کرانا تھا، جبکہ اس کا دوسرا اور اہم مقصد مختلف مکاتب فکر کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرکے انکے درمیان اتحاد کی فضا برقرار کرانا تھا۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس بات پر خوشی اور فخر محسوس کرتے ہیں کہ انہوں نے مختلف مکاتب فکر کے علماء اور عوام الناس کو ایک پلیٹ فارم پر جمع کرکے ایک دوسرے کے نظریات سننے کا موقع فراہم کیا۔ آخر میں جلسے کے مہمان خصوصی، متحدہ اہلحدیث کے مرکزی چیئرمین علامہ سید ضیاء اللہ شاہ بخاری صاحب نے سیدہ کونین جناب فاطمۃ الزہرا سلام اللہ علیھا اور حسنین کریمین علیہم السلام کی شخصیت اور انکی سیرت و کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ان شخصیات کی تربیت انکے بابا نے کچھ ایسے انداز میں کی کہ بچپن ہی سے جبکہ وہ ابھی مکلف ہی نہیں تھے، انہیں حلال و حرام کی تمیز سکھا دی۔ انہوں نے ایک واقعے کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایک دفعہ زکواۃ کی کھجوروں کے پڑے ایک ڈھیر سے نہایت کمسنی میں امام حسین علیہ السلام نے ایک کھجور اٹھا کر منہ میں ڈالی تو حضور اکرم نے فوراً اٹھ کر انگلی سے وہ کھجور ان کے دہن مبارک سے نکال ڈالی۔ حاضرین میں سے ایک صحابی نے وجہ پوچھی تو فرمایا کہ یہ زکواۃ کا مال ہے، جو کہ ہمارے خانوادے (سادات) پر حرام ہے۔ حاضرین محفل کو مخاطب کرتے ہوئے انکا کہنا تھا کہ اپنے بچوں کو بچپن ہی سے حلال و حرام کی تمیز سکھائیں، واجبات و محرمات اور دیگر تمام احکام پر بچپن ہی میں انہیں عملاً کاربند رکھنے کی کوشش کریں۔ انہوں نے علامہ سلفی صاحب کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ یہی سیرت نبوی ہے کہ اپنے بچوں اور بچیوں کو قرآن اور اسلام کی تعلیم دلائی جائے۔
 
خبر کا کوڈ: 704203